انصاف تعلیم کارڈ سکیم حکومت خیبر پختون خواہ کا اجراء2022-2023

پشاور انصاف تعلیم کارڈ سکیم

پشاورخیبر پختونخواہ چیف منسٹرمحمود خان کی طرف سے998.500 ملین روپےکی فنانس ڈیپارٹمنٹ کیطرف سےانصاف تعلیم کارڈ کا 2022-20233سال کا اجراء کر دیا ہے۔
اس سکیم سے وہ طالب علم مستفید ہو سکیں گے جو گورنمنٹ کالجز میں داخل ہیں اورسالانہ اور سمسٹر کی فیس ادا کرنےمیں مشکلات کا سامنا کر رہےہیں۔موجودہ صورت حال میں دولاکھ چولالیس لاکھ آٹھ سو اٹھاون طالب علم خیبر پختون خواہ کے دو چوہتر کالجز میں زیر تعلیم ہیں۔
چیف منسٹر نے خطاب کرتے ہوئےکہ کہ انصاف تعلیم کارڈ کے اجراء کرنےکے بعد خیبر پختون خواہ حکومت اس کو بڑھائےگی۔اور جوپبلک سیکٹرپرزیرتعلیم ہیں انکی امداد کی جائےگی۔
منسٹر ایجوکیشن کامران بنگش اور سپیشل اسسٹنٹ چیف منسٹر انفارمیشن محمد علی سیف نے بھی میڈیا میں اس کے بارے میں بریف کیا۔
انصاف تعلیم کارڈ دوسرا ایک پراجیکٹ ہےاس سے پہلے انصاف صحت کارڈ کا اجراء کیا گیا تھا۔اس صوبے میں اور اس پراجیکٹ ہزاروں طالب علم اس سےمستفید ہو سکیں گے۔
کابینہ نےخیبرپختونخون خواہ میں بنیادی صحت کی دیکھ بھال کومضبوط بنانےکےلئےورلڈ بینک کےنیشنل ہیلتھ سپورٹ پروجیکٹ کی حمایت پر اتفاق کیا ہے ۔صوبائی ہاوسنگ اتھارٹی خیبر پختون خواہ اور نیا پاکستان ہاوسنگ سکیم کےساتھ ساتھ ضلع نوشہرہ میں تیرہ سو بیس فلیٹ کی تعمیر کےمعاہدےپر منظوری دے دی۔
حکومت نےایجوکیشنل اینڈ ٹریننگ کی مدت میں توسیع کرنےکی منظوری دےدی۔
خیبر پختون خواہ ہائر ایجوکیشن ریسرچ انڈومنٹ فنڈ کی ترمیم بل2022 کو پبلک سکیٹر کالجز کو شامل کرنے اور بورڈ آف ڈائریکٹرز کی تشکیل ،اختیارات اور دیگر دفعات اورآڈٹ کےلئے منظوری دےدی۔
کابینہ نےٹانک میں گومل یونیورسٹی کیمپس کےقیام کےلئے100 کنال سرکاری ہائر ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ کے نام کرنےکی منظوری دے دی۔

Leave a Comment